پاکپتن (حسن بخاری سے) ملک میں صدارتی نظام بارے کوئی مشاورت نہیں ہو رہی ملک میں پارلیمانی نظام موجود ہے، سوشل میڈیا پر چلنے والی میرے استعفے کی کوئی صداقت نہیں ہے یہ جھوٹ کا پلندہ ہے، ان خیالات کا اظہار گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، انہوں نے کہا کہ موجودہ بلدیاتی نظام کے متعلق جلد فیصلہ کر لیا جائے گا،انہوں نے کہا کہ نئے بلدیاتی نظام کے نفاذ کے بعد نئے بلدیاتی انتخابات کروائے جائیں گے، انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت کے جو چند ماہ ضائع ہوئے ہیں تحریک انصاف جلد عوام کے مسائل کو اپنے وعدوں کے مطابق پورے کرے گی، انہوں نے مزید کہا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی قیادت میں کرتار پور راہداری منصوبہ پر تیزی سے عمل در آمد ہو رہا ہے اور وہ اُس کمیٹی کے کوارڈینیٹر ہیں، چوہدری محمدسرور نے پولیس لائن میں سرور فاونڈیشن کی طرف سے لگائے گئے واٹر فلٹریشن پلانٹ کا افتتاح کیا اس موقع پر آر پی او ساہیوال شارق کمال، ڈپٹی کمشنر پاکپتن احمد کمال مان، ڈی پی او پاکپتن عبادت نثار بھی موجود تھے، بعد ازاں گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور نے دربار حضرت بابا فرید الدین ؒ پر حاضری دی، چادر چڑھائی اور ملک کی تعمیر و ترقی، سلامتی و امن کے لیے خصوصی دعا کی، گورنر پنجاب چوہدری محمد سرور میونسپل کمیٹی پاکپتن میں تحریک انصاف کے کونسلر رانا علی رضا کی رہائش گاہ پر گئے کارکنان، پارٹی عہدیداران، ارکان پنجاب اسمبلی پیر احمد شاہ کھگہ اور ساجدہ یوسف سے بھی ملاقات کی۔